گورنمنٹ افیئرز کے خلاف بونڈ جوڈی زوارٹس ٹنوں میں گھسا رہا ہے ، لیکن کچھ حاصل نہیں کر رہا ہے

میں دائر خبریں تجزیہ جات by 14 مئی 2020 پر ۰ تبصرے

ذریعہ: youtube.nl

آپ کو معاشی بھنور میں دبوچ لیا جاسکتا ہے ، جیسا کہ رابرٹ جینسن نے اس میں فروغ دیا تھا آخری نشر، لیکن آپ کے پیسوں کا کیا ہوتا ہے؟ مجھ سے بھی حکومتی امور کے خلاف بانڈ کے آغاز کار ، جورڈی زوارٹس (تصویر دیکھیں) کی حمایت کے لئے رابطہ کیا گیا تھا ، لیکن 5 جی کے خلاف اسی طرح کی کارروائی کے ساتھ اس نے اب تک کچھ حاصل نہیں کیا۔ تاہم ، اس نے دسیوں ہزار یورو (متعدد ذرائع) اکٹھے کیے اور اس سے لاک ڈاون کے خلاف قانونی چارہ جوئی اور ریاست سے ڈیڑھ میٹر اقدامات کی توقع کی جاسکتی ہے۔

"یہ ایک مالی بھنور کیوں ہے اور کیا آپ پہلے ہی کہہ رہے ہیں کہ یہ ورجلینڈ کچھ نہیں ہوگا؟ اب افواج میں شامل ہوں! کیفے ویلٹشمرٹز اس کی حمایت کرتے ہیں ، جینسن اس کی حمایت کرتے ہیں!“کیونکہ ججز اور وکلاء تخت (شاہی گھر) کی بیعت کرتے ہیں اور حلف کے ذریعہ انھوں نے جو بیعت کی تھی اس کو کبھی بھی پامال نہیں کریں گے۔

"ہاں ، لیکن کورونا وائرس کے اقدامات غیر آئینی ہیں! وہ واقعی کچھ حاصل کر سکتے ہیں!"صرف ایک ہی چیز جوارڈی زوارٹس حاصل کرے گی وہ یہ ہے کہ اس کا بینک اکاؤنٹ بڑھ جاتا ہے اور یہ کہ رابرٹ جینسن ("jensbaba33“) اس کو فروغ دے کر فوائد۔ اس دوران ، آپ انتظار کریں اور کچھ نہیں کریں گے۔

یقینا آپ واقعی یہ جان سکتے ہو کہ خود بھی ، لیکن میں نے آپ کو خبردار کیا۔ میرے خیال میں ہمیں واقعتا to جاگنے کی ضرورت ہے کہ کیا ہو رہا ہے۔

رابرٹ جینسن اور جورڈی زوارٹس (وفاقی حکومت کے امور) کے ذریعہ آپ دوسروں کو پہل کرتے رہتے ہیں۔ آپ € 29 جمع کرواتے ہیں اور پھر امید کرتے ہیں کہ کوئی وکیل مقدمہ دائر کرے گا ، جس میں کامیابی ہوسکتی ہے یا نہیں۔ کیا آپ واقعی میں بولی بننا چاہتے ہیں اور یقین رکھتے ہیں کہ کوئی جج ریاست کا فیصلہ کرنے والا ہے؟ نہیں ہرگز نہیں. ان سب نے تاج سے بیعت کی۔

ہمارے پاس وقت ضائع کرنے کے لئے وقت نہیں ہے۔ یہ 1 منٹ پہلے ہے۔ آج کی حکومت نے دکھایا ہے کہ وہ چند ہفتوں میں پورے معاشرے کو الٹا کر سکتی ہے۔ اس سے پہلے جو غیر حقیقی اور ناقابل عمل سمجھا جاسکتا تھا ، اسے بہت ہی کم وقت میں آگے بڑھایا گیا ہے۔ پوری معیشت اور ایک ساتھ رہنے کا پورا طریقہ الٹا ہوگیا ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ تیزی سے تبدیلی ممکن ہے۔ لہذا تبدیلی بہت تیزی سے چل سکتی ہے۔

یہ کسی حکومت سے تبدیلی کی توقع کرنے یا حکومتی امور کے خلاف بانڈ سے تبدیلی کی توقع کرنے والا نہیں ہے۔ ہمیں خود ہی کرنا ہے! ہمیں اپنی مایوسی کو اتحاد کے انتظار میں تبدیل نہیں کرنا چاہئے ، ہمیں اپنی مایوسی کو طاقت اور ٹھوس عمل میں تبدیل کرنا چاہئے۔ خود کو چالو کرنے ، خود ہی کریں۔ پڑھیں یہاں جاری رکھیں ...

ٹیگز: , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , ,

مصنف کے بارے میں ()

تبصرے (5)

ٹریک بیک URL | تبصرہ فیڈ آر ایس ایس

  1. مارٹن ویر لینڈ نے لکھا:

    نئے قارئین کے لئے: فری میسن آپ کو ہمیشہ یہ بتائیں کہ ان کا تعلق کلب سے ہے۔ نمبر 33 ایک اہم میسنک نمبر ہے۔

    مذکورہ جینسن کا براڈکاسٹ 33 منٹ تک جاری رہتا ہے اور جینسن اپنے آپ کو جینس بابا 33 کہتی ہے۔

    تصویر ہے نا؟ کنٹرول اپوزیشن۔

    • مارٹن ویر لینڈ نے لکھا:

      خلیج گیانا کے آس پاس کے ممالک میں سے بابا بہت بڑا افریقی ہے۔ اسے ایک غلام تاجر نے اغوا کیا تھا اور اسے نئی دنیا میں بیچا گیا تھا۔ ایک طویل عرصے تک اس نے ایک امریکی شجرکاری پر غلام زندگی بسر کی ، یہاں تک کہ اسے بحری قزاق ریڈ بیارڈ نے آزاد کرایا۔ تب سے ، وہ تپائی اور ریڈ بیارڈ کے اپنایا ہوا بیٹا ایرک کے ساتھ ، خوفزدہ ہائی جیکر کپتان کے بھروسہ کرنے والوں میں شامل ہے۔ اس کی بہن آچا الجیئرز میں ایک غلام تھی جو ایرک کو شہر سے فرار ہونے میں مدد دینے کے بعد ہلاک ہوگئی تھی۔

      یہ بڑی ، بہت مضبوط ہے اور ڈولفن کی طرح تیراکی کرتی ہے۔ وہ "r" کا تلفظ نہیں کرسکتا ، جس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ وہ ہوشیار نہیں ہے ، کیونکہ اس کے پاس اکثر اچھے خیالات اور مضبوط حکمت عملی ہوتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ روڈبارڈ اور ایرک باقاعدگی سے کسی زمینی حملے کی تنظیم کو بابا پر چھوڑ دیتے ہیں۔

      https://nl.wikipedia.org/wiki/Baba_(personage)

    • گلاب نے لکھا:

      ہاں ، بہت سارے b (l) ab (l) a…

  2. مارٹن ویر لینڈ نے لکھا:

    جینسن اب اپنی تمام تر توجہ حکومتی امور کے خلاف بانڈ پر ڈال رہی ہے (اور شاید کل سے دوبارہ کر دے گی) اس کی وجہ یہ ہے کہ آپ واقعی آزاد شہری اقدام میں شامل نہیں ہوسکتے ہیں۔ آپ کو کنٹرول سکیورٹی نیٹ میں رہنا چاہئے اور سب سے بڑھ کر ، تیرنا نہیں ہے اور خود کو شروع کرنا ہے۔

    ویسے بھی ایسا کرنے کا وقت: https://www.fvvd.nl/

  3. مارٹن ویر لینڈ نے لکھا:

    Een reactie van een lezer. U kunt zelf wel beoordelen of deze man de juiste dingen zegt:

    ہیلو،

    Langs deze weg wil ik u bedanken voor de waarschuwing, die u hebt gepost voor Bond tegen overheidszaken. Ik wil u er ook op wijzen, dat de deelnemers aanspraak maken op schadevergoeding, niet van de Staat, Minister of bestuurders van telecombedrijven, maar van de Bond en Zwarts.

    Iedere echte advocaat of (andere) jurist, die de door de Bond aan de Minister en enkele bestuurders van telecombedrijven verzonden ‘aansprakelijkstelling’ leest, begrijpt direct, dat Zwarts een onwetend persoon is, die misschien op enig moment een wetboek heeft opengeslagen, maar ook dat valt te betwijfelen.

    Volgens de Bond is de grondslag van de persoonlijke aansprakelijkheid van de Minister en bestuurders, de UVRM. Nog los van het uitgangspunt, dat – zo al sprake mocht zijn van een (on)rechtmatige (overheids)daad – de Staat en telecombedrijven aansprakelijk zullen zijn en niet de Minister en bestuurders, is een geslaagd beroep op de UVRM uitgesloten. De UVRM is geen bindend verdrag of besluit als bedoeld in art. 94 Grondwet (Hoge Raad 7 november 1984, NJ 1985/247). Dat is onder echte advocaten en (andere) juristen algemeen bekend. Reeds om die reden is de aansprakelijkstelling evident kansloos.

    Bovendien mag van een benadeelde partij worden verwacht, dat hij de omvang van de schade onderbouwt. De Bond stelt, dat benadeelde partijen aanspraak maken op een schadevergoeding van € 2000,00 per dag, maar laat na om dat bedrag deugdelijk te onderbouwen. Er zou sprake. Zijn van inkomstenderving, maar de deelnemers zouden dan gewoonlijk zo’n € 60.000,00 per deelnemer per maand moeten verdienen en die inkomsten als gevolg van de uitrol van 5G moeten verliezen. Bijzonder onwaarschijnlijk en nog een reden, waarom de aansprakelijkstelling (op voorhand) evident kansloos is.

    Dan gebeurt iets heel vreemds. De Bond trekt namens de deelnemers, de aan de Minister verleende volmacht tot (volks)vertegenwoordiging (voorwaardelijk) in, aangezien die volmacht op grond van art. 3:44 Burgerlijk Wetboek nietig zou zijn. Ten eerste is de bij de Minister rustende bevoegdheid tot (volks)vertegenwoordiging (natuurlijk) niet ontleend aan een privaatrechtelijke rechtshandeling, zodat art. 3:44 Burgerlijk Wetboek niet van toepassing is. Ten tweede is een rechtshandeling, die is verricht onder invloed van de in art. 3:44 Burgerlijk Wetboek bedoelde omstandigheden niet nietig, maar vernietigbaar. Als Zwarts de moeite had genomen om het artikel te lezen, had hij dat ontdekt.

    Het zijn dus niet zozeer de Minister en bestuurders, die aansprakelijk kunnen zijn jegens de deelnemers, maar veeleer de Bond en Zwarts zelf, door hun belangen niet te behartigen zoals een redelijk handelend en redelijk bekwaam rechtsbijstandverlener dat zou hebben gedaan (zie bijvoorbeeld Hoge Raad 18 september 2015, NJ 2016/66). De schade, die de deelnemers hebben geleden, bestaat uit de deelnemingsfee, aangezien voor die deelnemingsfee door de Bond geen deugdelijke prestatie is geleverd.

    Ik zou Zwarts, die voorheen kok was, willen adviseren om bij zijn figuurlijke leest te blijven. Ik ga als jurist ook geen restaurant oprichten en voor 500 mensen per avond koken. Daar ben ik eenvoudigweg niet voor opgeleid.

    مبارکباد،
    زیادہ سے زیادہ

    -
    Deze e-mail is verzonden vanuit het contactformulier op martinvrijland.nl

جواب دیجئے

سائٹ استعمال کرنے کے لۓ آپ کو کوکیز کے استعمال سے اتفاق ہے. مزید معلومات

اس ویب سائٹ پر کوکی کی ترتیبات کو 'کوکیز کی اجازت دینے کیلئے' مقرر کیا جاسکتا ہے تاکہ آپ کو بہترین برائوزنگ تجربہ ممکن ہو. اگر آپ اپنی کوکی ترتیبات کو تبدیل کرنے کے بغیر اس ویب سائٹ کو استعمال کرتے رہیں گے یا ذیل میں "قبول کریں" پر کلک کریں تو آپ اتفاق کرتے ہیں ان کی ترتیبات

بند کریں